Connect with us

اسرائیل کی تباہی میں اتنا وقت باقی ہے

  • دن
  • گھنٹے
  • منٹ
  • سیکنڈز

Palestine

اسرائیلی کھدائیوں سے مسجد ابراہیمی کے وجود کو شدید خطرات لاحق

قابض اسرائیلی حکام نے الخلیل میں قائم تاریخی مسجد ابراہیمی کے آس پاس میں یہودی کاری کا کام جاری رکھا ہے۔ نئی کھدائیوں کے نتیجے میں مسجد کی عمارت کو شدید خطرات لاحق ہوگئے ہیں۔

مسجد ابراہیمی کے ڈائریکٹر غسان الرجبی نے کہا کہ گزشتہ سال 10 اگست سے قابض فوج نے مسجد کے اطراف میں یہودیت کی خطرناک ترین سکیموں پر عمل درآمد شروع کر دیا ہے۔

الرجبی نے مزید کہا کہ قابض حکام نے “برقی لفٹ” تک پہنچنے کے لیے “سیاحتی راستے” کے نام سے 239 میٹر تک کا فاصلہ “سرپل کی شکل ” اسکیم پر عمل درآمد شروع کر دیا تاکہ مسجد ابراہیمی کا زیادہ تر حصہ چرایا جا سکے اور اس کی قیمتی اراضی پر قبضہ جمایا جا سکے۔

انہوں نے نشاندہی کی کہ لفٹ مسجد ابراہیمی کے صحنوں کی تقریباً 93 مربع میٹر زمین ہڑپ کر جائے گی۔

انہوں نے ایک نیٹ ورک کی نگرانی کی طرف توجہ مبذول کروائی جسے قابض حکام اور اس کے آباد کاروں نے ضبط کر لیا تھا۔

الرجبی نے کہا کہ جو چیز الخلیل کے اندر طے پانے والے بڑے تصفیے کے منصوبوں کو تقویت دیتی ہے وہ قابض ریاست میں سینئر شخصیات کی پے در پے دراندازی ہیں جن میں سے تازہ ترین امریکی نائب صدر مائیک پینس کے کل کیے گئے طوفانی دورے کی شکل میں سامنے آئی۔ امریکی نائب صدر کہ دورہ الخلیل سے فلسطین میں یہودی آباد کاری کی پالیسی میں معاونت کے سوا کچھ نہیں۔

Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Copyright © 2018 PLF Pakistan. Designed & Maintained By: Creative Hub Pakistan