Connect with us

اسرائیل کی تباہی میں اتنا وقت باقی ہے

  • دن
  • گھنٹے
  • منٹ
  • سیکنڈز

Palestine

کیا اسرائیل بیرون ملک فلسطینی قیادت کو نشانہ بنانا چاہتا ہے؟

غزہ ۔ مرکز اطلاعات فلسطین+-
قابض اسرائیلی قابض حکام کی جانب سے اپنے اتحادیوں کو مقبوضہ فلسطینی علاقوں سے باہر فلسطینی مزاحمتی رہ نماؤں کے قتل کے ارادے سے آگاہ کرنے کی خبروں نے ان وجوہات کے بارے میں سوالات اٹھائے ہیں جنہوں نے اُنہیں اس اختیار پر غور کرنے پر مجبور کیا۔

مبصرین نے مشورہ دیا کہ “تل ابیب” غزہ کی پٹی سے باہر کسی ہدف کی تلاش کرے گا۔ اس کے خلاف نئی جنگ شروع کرنے سے بچنے کے لیے وہ فلسطین کی بیرون ملک قیادت کو نشانہ بنانا چاہتا ہے۔

اسلامی تحریک ’حماس‘ کے پولیٹیکل بیورو کے رکن سہیل الہندی نے کہا کہ قابض ریاست کی طرف سے گذشتہ ادوار کے دوران قتل و غارت کی جو پالیسی اختیار کی گئی، وہ کسی نہ کسی صورت میں ناکام ثابت ہوئی ہے۔

قدس پریس سے بات کرتے ہوئےالہندی نے وعدہ کیا کہ فلسطینی دھڑوں کی پہلی صف کے رہ نماؤں، جیسے الشیخ احمد یاسین، خلیل الوزیر، ابوعلی مصطفی، فتحی الشقاقی، اور دیگرنے صرف فلسطینی دھڑوں کی طاقت، وسعت اور پھیلاؤ میں اضافہ کیا ہے۔

حماس کے رہ نما نے مزید کہا کہ ان کی تحریک اب بہت بہتر پوزیشن میں ہے، اس کی صلاحیتیں دس سال پہلے کی نسبت زیادہ ہیں، اس کا ردعمل زیادہ ہوگا، کیونکہ اس کی عسکری اور سیکورٹی صلاحیتیں دوگنی ہو گئی ہیں۔

انہوں نے زور دے کر کہا کہ قابض ریاست کا پیغام بہت واضح ہے۔ اس صورت میں کہ یہ سینیر اور متوازن رہ نماؤں کو قتل کرتا ہے۔

Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Copyright © 2018 PLF Pakistan. Designed & Maintained By: Creative Hub Pakistan